www.urdu110.com
www.urdu110.com

Here IsTechnology,Urdu Adab, Poetry, and much more...
 
HomeHome  PortalPortal  GalleryGallery  MemberlistMemberlist  UsergroupsUsergroups  RegisterRegister  Log inLog in  
Latest topics
» Payam Poetry On facebook
1/3/2014, 09:20 by Ahmed_Jan

» Hdd Regenerator 2013 Full Gratis
1/3/2014, 09:15 by Ahmed_Jan

» Salam To All Member
6/9/2013, 12:53 by jan_zhob

» TeamViewer Conntrol AnAutor Pc By JAn
14/6/2013, 14:58 by Ahmed_Jan

» Salgiar Mubarak
12/8/2012, 08:00 by Ahmed_Jan

» DUE -E- MAGFARAT
25/6/2012, 10:47 by zeemano

» New Desin Shairy
28/5/2012, 16:15 by shahzad ahmad

» Khod Muj Se Ye Khata Hogia
27/5/2012, 12:21 by muhammad arshad

» Ahmed Faraz 1st Book Tanha Tanha.
15/5/2012, 17:06 by rahmatjan

Who is online?
In total there is 1 user online :: 0 Registered, 0 Hidden and 1 Guest

None

Most users ever online was 15 on 20/10/2013, 18:47
Top posters
Ahmed_Jan
 
jan_zhob
 
Wahid45
 
hakeem_zhob
 
fayzi
 
haleem_gul
 
matinkhan
 
rahmatjan
 
zainlawoon
 
monthazir m monthazirm
 
Keywords
desktop faraz hakeem download inpage funny ahmad clock duaa
Search
 
 

Display results as :
 
Rechercher Advanced Search
Social bookmarking
Social bookmarking Digg  Social bookmarking Delicious  Social bookmarking Reddit  Social bookmarking Stumbleupon  Social bookmarking Slashdot  Social bookmarking Yahoo  Social bookmarking Google  Social bookmarking Blinklist  Social bookmarking Blogmarks  Social bookmarking Technorati  

Bookmark and share the address of www.urdu110.com on your social bookmarking website

Share | 
 

 سنا ہے لوگ اُسے آنكھ بھر كے دیكھتے ہیں

View previous topic View next topic Go down 
AuthorMessage
Ahmed_Jan
Admin
Admin
avatar

Posts : 276
Reputation : 0
Join date : 2011-10-23
Age : 22
Location : Pakistan

PostSubject: سنا ہے لوگ اُسے آنكھ بھر كے دیكھتے ہیں    1/12/2011, 08:16




سنا ہے لوگ اُسے آنكھ بھر كے دیكھتے ہیں
تو اس کے شہر میں‌کچھ دن ٹھہر کے دیکھتے ہیں
سنا ہے ربط ہے اس کو خراب حالوں سے
سو اپنے آپ کو برباد کرکے دیکھتے ہیں
سنا ہے درد کی گاہک ہے چشمِ ناز اس کی
سو ہم بھی اس کی گلی سے گزر کے دیکھتے ہیں
سنا ہے اس کو بھی ہے شعر و شاعری سے شغف
تو ہم بھی معجزے اپنے ہنر کے دیکھتے ہیں
سنا ہے بولےتو باتوں سے پھول جھڑتے ہیں
یہ بات ہے تو چلو بات کر کے دیکھتے ہیں
سنا ہے رات اسے چاند تکتا رہتا ہے
ستارے بام فلک سے اتر کے دیکھتے ہیں
نا ہے دن کو اسے تتلیاں ستاتی ہیں
سنا ہے رات کو جگنو ٹھہر کے دیکھتےہیں
سنا ہے حشر ہیں‌اس کی غزال سی آنکھیں
سنا ہے اس کو ہرن دشت بھر کے دیکھتے ہیں
سنا ہے رات سے بڑھ کر ہیں‌کاکلیں اس کی
سنا ہے شام کو سائے گزر کے دیکھتے ہیں
سنا ہے اس کی سیہ چشمگی قیامت ہے
سو اس کو سرمہ فروش آہ بھر کے دیکھتے ہیں
سنا ہےجب سے حمائل ہے اس کی گردن میں
مزاج اور ہی لعل و گوہر کے دیکھتے ہیں
سنا ہے اس کے بدن کی تراش ایسی ہے
کہ پھول اپنی قبائیں کتر کے دیکھتے ہیں
سنا ہے اس کے لبوں سے گلاب جلتے ہیں
سو ہم بہار پہ الزام دھر کےدیکھتے ہیں
سنا ہے آئینہ تمثال ہے جبیں اس کی
جو سادہ دل ہیں‌اسے بن سنور کے دیکھتے ہیں
بس اک نگاہ سے لٹتا ہے قافلہ دل کا
سو راہ روانِ تمنا بھی ڈر کے دیکھتے ہیں
وہ سرو قد ہے مگر بے گل مراد نہیں
کہ اس شجر پہ شگوفے ثمر کے دیکھتے ہیں
بس اك نگاہ سے لوٹا ہے قافلہ دل كا
سو رہ روان تمنا بھی ڈر كے دیكھتے ہیں
سنا ہے اس کے شبستاں سے متصل ہے بہشت
مکیں‌ ادھر کے بھی جلوے اِدھر کے دیکھتے ہیں
کسے نصیب کے بے پیرہن اسے دیکھے
کبھی کبھی درودیوار گھر کے دیکھتے ہیں
رکے تو گردشیں اس کا طواف کرتی ہیں
چلے تو اس کو زمانے ٹھہر کے دیکھتے ہیں
کہانیاں ہی سہی ، سب مبالغے ہی سہی
اگر وہ خواب ہے تعبیر کرکے دیکھتے ہیں
اب اس کے شہر میں‌ٹھہریں کہ کوچ کر جائیں
فراز آؤ ستارے سفر کے دیکھتے ہیں
Back to top Go down
http://urdu110.forumur.net
Ahmed_Jan
Admin
Admin
avatar

Posts : 276
Reputation : 0
Join date : 2011-10-23
Age : 22
Location : Pakistan

PostSubject: سراپا عشق ہوں میں اب بکھر جاؤں تو بہتر ہے    1/12/2011, 08:22

سراپا عشق ہوں میں اب بکھر جاؤں تو بہتر ہے
جدھر جاتے ہیں یہ بادل ادھر جاؤں تو بہتر ہے
ٹھہر جاؤں یہ دل کہتا ہے تیرے شہر میں کچھ دن
مگر حالات کہتے ہیں کہ گھر جاؤں تو بہتر ہے
دلوں میں فرق آئیں گے تعلق ٹوٹ جائیں گے
جو دیکھا جو سنا اس سے مکر جاؤں تو بہتر ہے
یہاں ہے کون میرا جو مجھے سمجھے گا فراز
میں کوشش کر کے اب خود ہی سنور جاؤں تو بہتر ہے


Last edited by jan_zhob on 1/12/2011, 08:26; edited 1 time in total
Back to top Go down
http://urdu110.forumur.net
Ahmed_Jan
Admin
Admin
avatar

Posts : 276
Reputation : 0
Join date : 2011-10-23
Age : 22
Location : Pakistan

PostSubject: اِس کا سوچا بھی نہ تھا اب کے جو تنہا گزری   1/12/2011, 08:24




اِس کا سوچا بھی نہ تھا اب کے جو تنہا گزری
وہ قیامت ہی غنیمت تھی جو یکجا گزری

آ گلے تجھ کو لگا لوں میرے پیارے دشمن
اک مری بات نہیں تجھ پہ بھی کیا کیا گزری

میں تو صحرا کی تپش، تشنہ لبی بھول گیا
جو مرے ہم نفسوں پر لب ِدریا گزری

آج کیا دیکھ کے بھر آئی ہیں تیری آنکھیں
ہم پہ اے دوست یہ ساعت تو ہمیشہ گزری

میری تنہا سفری میرا مقدر تھی فراز
ورنہ اس شہر ِتمنا سے تو دنیا گزری
Back to top Go down
http://urdu110.forumur.net
Ahmed_Jan
Admin
Admin
avatar

Posts : 276
Reputation : 0
Join date : 2011-10-23
Age : 22
Location : Pakistan

PostSubject: Re: سنا ہے لوگ اُسے آنكھ بھر كے دیكھتے ہیں    7/12/2011, 06:09

Back to top Go down
http://urdu110.forumur.net
matinkhan
Junair Poster
Junair Poster
avatar

Posts : 17
Reputation : 3
Join date : 2012-02-23

PostSubject: Re: سنا ہے لوگ اُسے آنكھ بھر كے دیكھتے ہیں    28/2/2012, 07:37

Back to top Go down
matinkhan
Junair Poster
Junair Poster
avatar

Posts : 17
Reputation : 3
Join date : 2012-02-23

PostSubject: Re: سنا ہے لوگ اُسے آنكھ بھر كے دیكھتے ہیں    28/2/2012, 07:38

Back to top Go down
matinkhan
Junair Poster
Junair Poster
avatar

Posts : 17
Reputation : 3
Join date : 2012-02-23

PostSubject: Re: سنا ہے لوگ اُسے آنكھ بھر كے دیكھتے ہیں    28/2/2012, 07:39

Back to top Go down
Sponsored content




PostSubject: Re: سنا ہے لوگ اُسے آنكھ بھر كے دیكھتے ہیں    

Back to top Go down
 
سنا ہے لوگ اُسے آنكھ بھر كے دیكھتے ہیں
View previous topic View next topic Back to top 
Page 1 of 1

Permissions in this forum:You cannot reply to topics in this forum
www.urdu110.com :: Poetry :: All Urdu Poets :: Ahmed Faraz-
Jump to: