www.urdu110.com
www.urdu110.com

Here IsTechnology,Urdu Adab, Poetry, and much more...
 
HomeHome  PortalPortal  GalleryGallery  MemberlistMemberlist  UsergroupsUsergroups  RegisterRegister  Log inLog in  
Latest topics
» Payam Poetry On facebook
1/3/2014, 09:20 by Ahmed_Jan

» Hdd Regenerator 2013 Full Gratis
1/3/2014, 09:15 by Ahmed_Jan

» Salam To All Member
6/9/2013, 12:53 by jan_zhob

» TeamViewer Conntrol AnAutor Pc By JAn
14/6/2013, 14:58 by Ahmed_Jan

» Salgiar Mubarak
12/8/2012, 08:00 by Ahmed_Jan

» DUE -E- MAGFARAT
25/6/2012, 10:47 by zeemano

» New Desin Shairy
28/5/2012, 16:15 by shahzad ahmad

» Khod Muj Se Ye Khata Hogia
27/5/2012, 12:21 by muhammad arshad

» Ahmed Faraz 1st Book Tanha Tanha.
15/5/2012, 17:06 by rahmatjan

Who is online?
In total there is 1 user online :: 0 Registered, 0 Hidden and 1 Guest

None

Most users ever online was 15 on 20/10/2013, 18:47
Top posters
Ahmed_Jan
 
jan_zhob
 
Wahid45
 
hakeem_zhob
 
fayzi
 
haleem_gul
 
matinkhan
 
rahmatjan
 
zainlawoon
 
monthazir m monthazirm
 
Keywords
Search
 
 

Display results as :
 
Rechercher Advanced Search
Social bookmarking
Social bookmarking Digg  Social bookmarking Delicious  Social bookmarking Reddit  Social bookmarking Stumbleupon  Social bookmarking Slashdot  Social bookmarking Yahoo  Social bookmarking Google  Social bookmarking Blinklist  Social bookmarking Blogmarks  Social bookmarking Technorati  

Bookmark and share the address of www.urdu110.com on your social bookmarking website

Share | 
 

 Deewan e Ghalib

View previous topic View next topic Go down 
AuthorMessage
Ahmed_Jan
Admin
Admin
avatar

Posts : 276
Reputation : 0
Join date : 2011-10-23
Age : 22
Location : Pakistan

PostSubject: Deewan e Ghalib    22/11/2011, 08:46

نقش فریادی ہےکس کی شوخئ تحریر کا


کاغذی ہے پیرہن ہر پیکرِ تصویر کا


شوخئِ نیرنگ، صیدِ وحشتِ طاؤس ہے


دام، سبزے میں ہے پروازِ چمن تسخیر کا


لذّتِ ایجادِ ناز، افسونِ عرضِ ذوقِ قتل


نعل آتش میں ہے، تیغِ یار سے نخچیر کا


کاؤکاوِ سخت جانی ہائے تنہائی نہ پوچھ


صبح کرنا شام کا، لانا ہے جوئے شیر کا


جذبۂ بے اختیارِ شوق دیکھا چاہیے


سینۂ شمشیر سے باہر ہے دم شمشیر کا


آگہی دامِ شنیدن جس قدر چاہے بچھائے


مدعا عنقا ہے اپنے عالمِ تقریر کا


خشت پشتِ دستِ عجز و قالب آغوشِ وداع


پُر ہوا ہے سیل سے پیمانہ کس تعمیر کا


وحشتِ خوابِ عدم شورِ تماشا ہے اسدؔ


جو مزه جوہر نہیں آئینۂ تعبیر کا


بس کہ ہوں غالبؔ ، اسیری میں بھی آتش زیِر پا


موئے آتش دیده ہے حلقہ مری زنجیر کا
Back to top Go down
http://urdu110.forumur.net
Ahmed_Jan
Admin
Admin
avatar

Posts : 276
Reputation : 0
Join date : 2011-10-23
Age : 22
Location : Pakistan

PostSubject: جنوں گرم انتظار و نالہ بیتابی کمند آیا   22/11/2011, 08:48

جنوں گرم انتظار و نالہ بیتابی کمند آیا

سویدا تا بلب زنجیر سے دودِ سپند آیا

مہِ اختر فشاں کی بہرِ استقبال آنکھوں سے

تماشا کشورِ آئینہ میں آئینہ بند آیا

تغافل، بد گمانی، بلکہ میری سخت جانی ہے

نگاهِ بے حجابِ ناز کو بیمِ گزند آیا
Back to top Go down
http://urdu110.forumur.net
Ahmed_Jan
Admin
Admin
avatar

Posts : 276
Reputation : 0
Join date : 2011-10-23
Age : 22
Location : Pakistan

PostSubject: عالم جہاں بعرضِ بساطِ وجود تھا   22/11/2011, 08:50

عالم جہاں بعرضِ بساطِ وجود تھا
جوں صبح، چاکِ جَیب مجھے تار و پود تھا
جز قیس اور کوئی نہ آیا بروئے کار
صحرا، مگر، بہ تنگئ چشمِ حُ سود تھا
بازی خورِ فریب ہے اہلِ نظر کا ذوق
ہنگامہ گرم حیرتِ بود و نمود تھا
خموشاں ہے سر بسر عالم طلسمِ شہرِ
یا میں غریبِ کشورِ گفت و شنود تھا
آشفتگی نے نقشِ سویدا کیا درست
ظاہر ہوا کہ داغ کا سرمایہ دود تھا
تھا خواب میں خیال کو تجھ سے معاملہ
جب آنکھ کھل گئی نہ زیاں تھا نہ سود تھا
لیتا ہوں مکتبِ غمِ دل میں سبق ہنوز
لیکن یہی کہ رفت گیا اور بود تھا
ڈھانپا کفن نے داغِ عیوبِ برہنگی
میں، ورنہ ہر لباس میں ننگِ وجود تھا
تیشے بغیر مر نہ سکا کوہکن اسدؔ
سرگشتۂ خمارِ رسوم و قیود تھا
Back to top Go down
http://urdu110.forumur.net
Ahmed_Jan
Admin
Admin
avatar

Posts : 276
Reputation : 0
Join date : 2011-10-23
Age : 22
Location : Pakistan

PostSubject: عشق سے طبیعت نے زیست کا مزا پایا   22/11/2011, 08:52

عشق سے طبیعت نے زیست کا مزا پایا

درد کی دوا پائی، درد بے دوا پایا

غنچہ پھر لگا کھلنے، آج ہم نے اپنا دل

خوں کیا ہوا دیکھا، گم کیا ہوا پایا

شورِ پندِ ناصح نے زخم پر نمک چھڑکا

آپ سے کوئی پوچھے تم نے کیا مزا پایا

فکرِ نالہ میں گویا، حلقہ ہوں زِ سر تا پا

عضو عضو جوں زنجیر، یک دلِ صدا پایا

حال دل نہیں معلوم، لیکن اس قدر یعنی

ہم نے بار ہا ڈھونڈھا، تم نے بارہا پایا

شب نظاره پرور تھا خواب میں خرام اس کا

صبح موجۂ گل کو نقشِ بوریا پایا

جس قدر جگر خوں ہو، کوچہ دادنِ گل ہے

زخمِ تیغِ قاتل کو طُرفہ دل کشا پایا

ہے نگیں کی پا داری نامِ صاحبِ خانہ

ہم سے تیرے کوچے نے نقشِ مدّعا پایا

دوست دارِ دشمن ہے! اعتمادِ دل معلوم

آه بے اثر دیکھی، نالہ نارسا پایا

نَے اسد جفا سائل، نَے ستم جنوں مائل

تجھ کو جس قدر ڈھونڈھا الفت آزما پایا
Back to top Go down
http://urdu110.forumur.net
Ahmed_Jan
Admin
Admin
avatar

Posts : 276
Reputation : 0
Join date : 2011-10-23
Age : 22
Location : Pakistan

PostSubject: کہتے ہو نہ دیں گے ہم دل اگر پڑا پایا   22/11/2011, 08:54

کہتے ہو نہ دیں گے ہم دل اگر پڑا پایا
دل کہاں کہ گم کیجیے؟ ہم نے مدعا پایا
ہے کہاں تمنّا کا دوسرا قدم یا رب
ہم نے دشتِ امکاں کو ایک نقشِ پا پایا
بے دماغِ خجلت ہوں رشکِ امتحاں تا کے
ایک بے کسی تجھ کو عالم آشنا پایا
سادگی و پرکاری، بے خودی و ہشیاری
حسن کو تغافل میں جرأت آزما پایا
خاکبازئِ امید، کارخانۂ طفلی
یاس کو دو عالم سے لب بخنده وا پایا
کیوں نہ وحشتِ غالبؔ باج خواهِ تسکیں ہو
کشتۂ تغافل کو خصمِ خوں بہا پایا

Back to top Go down
http://urdu110.forumur.net
fayzi
Junair Poster
Junair Poster
avatar

Posts : 28
Reputation : 3
Join date : 2012-02-01

PostSubject: Re: Deewan e Ghalib    28/2/2012, 09:21

Back to top Go down
fayzi
Junair Poster
Junair Poster
avatar

Posts : 28
Reputation : 3
Join date : 2012-02-01

PostSubject: Re: Deewan e Ghalib    28/2/2012, 09:21

Back to top Go down
fayzi
Junair Poster
Junair Poster
avatar

Posts : 28
Reputation : 3
Join date : 2012-02-01

PostSubject: Re: Deewan e Ghalib    28/2/2012, 09:22

Back to top Go down
Sponsored content




PostSubject: Re: Deewan e Ghalib    

Back to top Go down
 
Deewan e Ghalib
View previous topic View next topic Back to top 
Page 1 of 1

Permissions in this forum:You cannot reply to topics in this forum
www.urdu110.com :: Poetry :: All Urdu Poets :: Ghalib-
Jump to: